انسانی خدمت کا مرحلہ وار سفر

Click here to View Printed Statement

ہر شخص کے اندر ایک رضاکار چھپا ہوتاہے اور ہر فرد اپنے طور پر انسانی خدمات سرانجام دے رہا ہوتا ہے۔چھپے رضاکار کو متحرک کرنا اور انسانی خدمت کے جذبے کو کسی مربوط نظام سے وابستہ کردینے سے حیران کن نتائج برآمد ہوسکتے ہیں۔ہلال احمرکے مرکزمیں چیئرمین ڈاکٹر سعید الٰہی کے ساتھ مختصر ملاقات میں چھپے رضاکار کو متحرک کرنے کا ایک راستہ مل گیا۔ اس قومی ادارے کی خدمات کے تعارف کے لئے ڈاکٹر سعید الٰہی صاحب نے میرا انتخاب کیا اور مجھے موٹیویشنل سپیکر کی ذمہ داری سونپ دی گئی ہے ۔میں نے ارادہ کر لیاہے کہ دُکھی انسانوں کی مدد کرنے والے اس ادارے کا کسی نہ کسی شکل میں تعارف کرا تار ہوں گا۔آج کا کالم اسی ارادے اور جذبے کا سادہ سا اظہار ہے۔ ہلال احمر کے میڈیا ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق9 فروری 1863ء کو سوئس تاجر ہنری ڈوننٹ نے جنیوا کے اندر عالمی ریڈ کراس کی بنیاد رکھی۔ریڈ کراس اور ریڈ کریسنٹ سوسائٹیز 189 ممالک میں کام کررہی ہیں۔

Continue reading »

Posted by AAMIR JAVED / 26 Jul 14

دس لاکھ محسنین

Click here to View Printed Statement

ایک بداندیش کالم نگار نے ”پانچ لاکھ خودکش” کے عنوان سے کالم لکھ کر قبائلی عوام کے جذبہ حب الوطنی کو مشکوک ٹھہرایا ہے۔دانشوروں کا المیہ ہی یہی ہے کہ وہ ان جانے خوف پھیلا کر سامنے کی خوبصورت حقیقتوں کا مذاق اڑانے میں ہی کمال قلم و علم ڈھونڈتے ہیں۔ کیا یہ بات روز روشن کی طرح عیاں نہیں ہے کہ شمالی وزیرستان میں ایک خاص فلسفہ کے حامل مسلح گروہ اپنی امارت قائم کرکے پاکستان کو تاخت و تاراج کرنے کی جانب بڑھتے چلے آرہے تھے۔ محب وطن قبائلی لوگ شروع شروع میں مزاحمت کرتے رہے اوروہاں مقامی رہائشیوں اور غیر ملکی جنگجوئوں کے درمیان خونی جھڑپیں بھی ہوتی رہیں لیکن جب ریاست اپنے لوگوں کا تحفظ نہ کرسکی اور وہاں کی سول انتظامیہ بھی خوفزدہ ہوکر ان خارجی عناصر کو راستہ دینے لگی تومقامی عوام خاموش ہوگئے۔ہمارے بعض دینی حلقے بھی جہاد کے نام پر گمراہ ہوئے ۔

Continue reading »

Posted by AAMIR JAVED / 24 Jul 14

احترام رمضان ا ور سیاسی اخلاق

Click here to View Printed Statement

سیاسی رہنمائوں کی بدزبانی سے پورا معاشرہ متاثر ہوتا ہے ۔اسلام نے بہتان باندھنے اور جھوٹ گھڑنے سے سختی کے ساتھ منع کیا ہے۔انسانی ضمیر بھی یہی درس دیتا ہے کہ محض محفل کو گرمانے اور جلسے کو قابو کرنے کے لئے بے بنیاد الزامات کا سہارا لینا کمینی حرکت ہوتی ہے۔ہمارے سیاستدان خود کو بڑی حد تک بالغ النظر کہتے ہیں لیکن وہ سیاسی مخالفت میں تمام اخلاقی حدود پھلانگ جاتے ہیں۔بعض اوقات تو وہ اپنے مخالف کی نجی زندگی کے معاملات کو بھی چوک چوراہے میں لے آتے ہیں۔ لسانی بدکاری کے لئے جناب شیخ رشید ہی کافی تھے۔اب تو ہر کوئی اسی گمراہی کا شکار دکھائی دے رہا ہے۔

Continue reading »

Posted by AAMIR JAVED / 17 Jul 14

روزے کو بچائیں

Click here to View Printed Statement

پاکستان میں انفرادی نیکیوں کی بہار رہتی ہے ۔ زہدوتقویٰ کی ایسی ایسی مثالیں ہیں کہ قرون اولیٰ کی یاد تازہ ہوجاتی ہے۔ شائد انہی نیک بندوں کی بدولت ہمارے اجتماعی گناہوں کی ابھی پکڑ نہیں ہوئی اور ہم گرتے پڑتے قومی زندگی کے سفر پر گامزن ہیں۔ اگر پاکستانی معاشرت سے محدود ے چند متقی لوگوں کو منہا کردیا جائے تو یوں محسوس ہوگا کہ اسلامی اقدار اور تعلیمات کا قدم قدم پر مذاق اڑایا جارہا ہے ۔ اس احساس کو مہیمزاس وقت لگتی ہے جب رمضان المبارک کا مقدس ماہ اپنی رحمتیں لئے آپہنچتا ہے۔ پاکستانی معاشرہ اس رحمتوں والے مہینے کا استقبال ضرور کرتا ہے’ لیکن اس استقبال کے پیچھے کارفرمانیت تقویٰ اور پرہیزگاری نہیں بلکہ نمودونمائش فضول خرچی’ منافع خوری اور ذخیرہ اندوزی جیسے منفی رجحانات پوشیدہ ہوتے ہیں۔ اس استقبال میں آج کل پیش پیش ہمارا میڈیا ہے۔استحصالی میڈیا اس قدر بے رحم ہے کہ وہ صلہ رحمی’ ایثار’ پردہ پوشی اور حاجت روائی جیسے انتہائی خوبصورت ‘انسان پرور اور صحیح اسلامی جذبوں کودبوچ کر ان کی جگہ ”ریٹنگ” اور” گلیمر” کو حاوی کررہا ہے۔ Continue reading »

Posted by AAMIR JAVED / 15 Jul 14

Content on this page requires a newer version of Adobe Flash Player.

Get Adobe Flash player